Sad Poetry in Urdu 2 Lines 2021 | Two Lines Sad Poetry in Urdu Text

Hi everyone! From smwhatsappstatus.com. This is Sad Poetry in Urdu 2 lines it is very interesting poetries.
check out it is an amazing collection of expressing your feelings. Sad Poetries is very famous In the world but most especially viewers in Pakistan and India. I upload this poetry because of your interest in Two lines of Sad Poetry.


SAD POETRY IN URDU 2 LINES

میں بھیک دے کے بھکاری سے بددعا لوں گا
کہ مجھ کو عین جوانی میں موت آ جائے

بعد تیرے سیاہ پوشی ہی بنی پہچان ہماری بچھڑ کر تجھ سے رنگوں سے واسطہ نہیں رہا
یہ بات سچ ہے کہ ہم گاؤں زادے ، شہر کی حسین لڑکیوں سے ڈرتے ہیں۔
خوبیاں اتنی تو نہیں کہ لوگوں کو اچھے لگیے لیکن کچھ پل ایسے ضرور چھوڑ جائیں گے کہ بھولنا آسان نہ ہو گا
ہم جیت بھی سکتے تھے اس عشق کی بازی کو وہ جیت کے خوش ہوگا ، یہ سوچ کے ہم ہارے
ایک ہی بار میں کہاں کھلتے ہیں محبت کے راز میں مثل حرف مشدد ہوں مجھے دوبارہ پڑھ

کوئی نہیں ہوتا اپنے سوا
دوسرا دوسرا ہی ہوتا ہے

تم تو غیروں کی بات کرتے ہو ہم نے اپنے بھی آزمائے

اشک آنکھوں میں,لہجے میں تھکن اتار بیٹھا ہوں

عجیب شخص ہوں…..خود ہی سے ہار بیٹھا ہو

کچھ لوگوں کو میں کبھی معاف نہیں کرونگا 

بیشک ان کو میری آہ لگے یا بدعا

مخالفوں سے ممکن ہے دوستی دوبارہ 

مگر منافقوں سے اتحاد اب نہیں کرنا

کوئی حاجت ہو تو ملنے چلے آتے ہیں 

ہمیں یاروں نے مزار سمجھ رکھا ہے

یہی دستور الفت ہے نمی آنکھوں میں  لے کر

سبھی سے کہنا پڑتا ہے. ہمارا حال اچھا ہے

ہمارے چہرے کی مسکراہٹ بھی

کتنے منافقوں کے لیئے موت ہے

کچھ سانحے وقت گزر جانے کے باوجود درد کی شدت پہلے دن جیسی ہی رکھتے ہیں

آج تو میری محبت کی کہانی سن لے کیسے بیتی میری زندگانی سن لے

اسے خاموشیاں پسند تھیں

سو ہم نے کفن اڑھ لیا

ہائے وہ آخری محبت کی صدا 

مت جاؤ چھوڑ کر خدا کے لیے

اسے خاموشیاں پسند تھیں

سو ہم نے کفن اڑھ لیا

کَیا غَرَض کیوں اِدھر تَوَجّہ ہو

حالِ دِل آپ کی بَلا جانے

تیرے عتاب سے کتنی نبھاہ کی ہم نے 

نا کوئی اشک بہایا نا آہ کی ہم نے

غم کی بارش نے بھی تیرے نقش کو دھویا نہیں

تو نے مجھ کو کھو دیا میں نے تجھے کھویا نہیں

قوس و قزاح کے رنگ تھے میرے خلوص میں

احباب سارے رنگوں کے،  اندھے ملے مجھے

‏ملیں گے حشر میں یہ_خواہش اپنی جگہ مگر

رہے گا ملال کہ اس جہاں میں وہ ہمارا نہیں ہوا

حصارِ ذات میں ایک آرزو مچلتی ہے

ہمیں بھی کاش کوئی ڈھونڈتا ہوا آئے

سوائے دھوکے کے یہاں کچھ بھی نہیں

ایک شہر مشہور ہے پنڈی کے نام سے

میں تیرا نام بتاؤں کس کو

یہ حال سناؤں کس کو

وہ تحمل سے بات سنے گا

میں ۔۔ بار بار روں گا

وہ اب خود کو بھی نہیں میسر

اور میں ۔ اُسکے لئے ترستا ہوں

تمہاری تصویر کے لیے دنیا کا سب سے خوبصورت فریم میری آنکھیں ہیں

میں کیسے بتاؤں تیرا ساتھ کیسا ہے

تو ایک شخص پوری کائنات جیسا ہے

جو کسی کا برا نہیں سوچتے 

اللہ پاک کبھی ان کے ساتھ برا نہیں ہونے دیتے

ٹکڑے ہوئے تھے دامن ہستی کے جس قدر

دلق گدائے عشق کے پیوند ہو گئے

اس شان کا آشفتہ و حیراں نہ ملے گا

آئینہ سے فرصت ہو تو تصویر صباؔ دیکھ

اے صدمہ فراق نہ کر ہم سے چھیڑ چھاڑ

‏تُو کس کا ناز ہے کہ تجھے بھی اُٹھائیں ہم

امید نہ کر اس دنیا میں کسی سے ہمدردی کی

 بڑے پیار سے زخم دیتے ہیں شدت سے چاہنے والے

اے صدمہ فراق نہ کر ہم سے چھیڑ چھاڑ

‏تُو کس کا ناز ہے کہ تجھے بھی اُٹھائیں ہم

سگریٹ پر لکھ کر نام تیرا غم دھوئیں میں اُڑا رہا ہوں

خود بھی جل رہا ہوں ،تُجھے بھی جلا رہا ہوں

کِردار سے بَنائیں _مِعیّارِ زِنَدَگی

ماحول سے حَیات کا سُودا نَہ کِیجئے

کبھی تو چمکے گا وہ چاند میرے آنگن میں 

ہجر کی یہ سیاہ راتیں سدا تو نہیں رہنی۔

میری بینائی بھی جاتی ہے تو بیشک جائے

بات سورج سے مگر آنکھ مِلا کر ہو گی

لوآج توڑدیاہم نےرشتہء، أمید

لواب کسی سےگلہ نہ کریں گےہم

کسی کی ذات کے ساتھ اتنا ہی بُرا کریں جتنا کل کو اپنی ذات کے لیے سہہ سکیں مکافاتِ عمل اٹل ہے

 شاید مجھے کسی سے محبت نہیں ہوئی   

لیکن یقین سب کو دلاتا رہا ہوں میں

اگر رک جائے میری دھڑکن__تو موت نا سمجھنا

کئی بار ایسا ہوا ہےتجھے یاد کرتے کرتے

اگر اداسی کی کوئی حد ہے

تو سمجھو پار کر لی میں نے

کبھی آو تو تم کو سنائیں وہ درد

 جو ھم نے دلوں میں چھپا رکھے ھیں

محفل ان کی ساقی انکا

آنکھیں میری ،باقی انکا

عزیز لوگو! کہاں گئے ہو

اُداس کرکے حیات میری

حالات سے سمجھوتا کرنا اتنا مشکل نہیں ہے عادتوں سے سمجھوتا کرنا مشکل ہے

وہ اپنی ایک ذات میں کل کائنات تھا 

دنیا کے ہر فریب سے ملوا دیا مجھے

زندگی اس لیے بھی حسین لگتی ہے کہ 

اس میں موت کا خوف شامل ہوتا ہے

پڑھنا عشق کی کتاب کو ہوتا نہیں آساں

خون جگر نچوڑ کر لکھی گئی ہے یہ

یاد رہ جاتی ہے بیگانہ روی اپنـــــوں کی 

وقت کا کــــیا ہے بہرحـــــال گزر جاتا ہے

بھیج دیتی ہوں مگر پہلے بتا دوں تجھ کو

مجھ سے ملتا نہیں کوئی میری تصویر کے بعد

‏دور ره کر جو سمایا هے میری روح میں

پاس والوں پہ وه شخص کتنا اثر کرتا هو گا

آنکھوں کی دسترس سے بھی باہر ہے وہ حسیں

اور دل یہ چاہتا ہے،  وہ بانہوں میں قید ہو

ٹوٹی ہے میری نیند مگر، تم کو اس سے کیا

بجتے رہیں ہواؤں سے در، تم کو اس سے کیا

یقین بہت تھا مجھے میری انا پر

اسنے میرا یہ بھی بھرم توڑ دیا

ہم دلاتے ہیں منافع کی ضمانت تجھ کو

ہم خریدیں گے محبت کے خسارے سارے

ہم سے بہتر کی تمنا 

تمہیں لے ڈوبی گی

استخارہ کہتا ہے کہ اس سے کنارہ کر لے

_ مگر دل کہتا ھے پھر سے استخارہ کر لے

Best Sad Poetry In Urdu 2 Lines Click More Quotes About Your Life. Thank You For support Me